الوداع سالِ رواں

سال رواں میں
بہت رو لیا میں نے
دوست، محبت اور رشتے
سب کچھ کھو دیا میں نے
اب سالِ نو میں
میرے پاس کھونے کو
کچھ بھی نہیں
آنکھ میں آنسو بھی نہیں
اسے لیے
نئے سرے سے
نئی زندگی کا عزم لے کر
نئی امیدوں، نئی آرزوں
اور نئی امنگوں کے ساتھ
الوداع سال رواں
خوش آمدید سال نو
از " محمد یاسر علی "
22 دسمبر2012، 10 بجے صبح

<<< پچھلا صفحہ اگلا صفحہ >>>

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔


اپنی قیمتی رائے سے آگاہ کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

میرا خواب، پیار، امن، مساوات اور انسانیت کا ترجمان نفرت، دہشتگردی، طبقاتی تفریق اور فرقہ پرستی سے پاک پاکستان " محمد یاسرعلی "

www.yasirnama.blogspot.com. Powered by Blogger.